جو خالی ہوتا ہے بھرتا بھی وہی ہے

اشفاق احمد صاحب فرماتے ہیں کہ جب بارش ہوتی ہے تو خالی گڑھے باران رحمت سے بخود بھر جاتے ہیں جب کہ موٹے موٹے اور اونچے ٹیلے ویسے کے ویسے ہی سوکھے رہ جاتے ہیں۔ اپنے آپ کو خالی رکھو کیونکہ جالی جھولی ہی بھری جاتی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *