Iqra – Jang Magazine – Daily Jang

آپ کے مسائل اور اُن کا حل

سوال:۔ قربانی کے لیے خریدا گیا جانور اگرذبح سےپہلے بچہ دے دےتو اسے بھی ماں کے ساتھ ذبح کردیا جائے یا زندہ صدقہ کردیا جائے ، اگر نہ کیا، یہاں تک کہ سال گزر گیا، تو کیا حکم ہے؟

جواب:۔ اگرقربانی کا جانور ذبح سے پہلے بچہ جن دے یا قربانی کے بعداس کے پیٹ سے زندہ بچہ نکل آئے تو اسےبھی ذبح کرکے گوشت صدقہ کردیا جائے اور اگر مُردہ نکلے تو اسے استعما ل میں لانا جائز نہیں ہے ۔ اگراسے قربانی کے ایام میں ذبح نہیں کیا تو قربانی کے ایام گزرنے کے بعد زندہ صدقہ کردیا جائے ، اگر گم یا ضائع ہوگیا یا اسے ذبح کرکےکھا لیا تو اس کی قیمت صدقہ کرنا ضروری ہوگا۔ اگر اسے ذبح نہیں کیا اور نہ ہی صدقہ کیا، یہاں تک کہ سال گزرگیا تو اب یہ اگلے سال کی قربانی کے لیےکافی نہیں ہوگا،بلکہ اگلے سال اگراسے ذبح کردیا تو ذبح شدہ ہی صدقہ کرنا ہوگا اور ذبح کی وجہ سے قیمت میں جو کمی ہوئی، اتنی رقم بھی صدقہ کرنا لازم ہوگا۔(الدر المختار وحاشيۃ ابن عابدین (رد المحتار) (6/ 322)

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں

مولاناڈاکٹرعبدالرزاق اسکندر سے مزید




Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*