کوئی گائے کسی کی ماتا نہیں ہوسکتی،آپ کے پاس دماغ ہے، یا گوبر بھرا ہوا ہے؟سابق بھارتی چیف جسٹس مرکنڈے کاٹجو کے ریمارکس نے ہندوؤں کو آگ لگادی


نئی دہلی (این این آئی)سابق بھارتی چیف جسٹس مرکنڈے کاٹجو کا ہندو مذہب سے اختلاف سامنے آگیا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق بھارتی سپریم کورٹ کے سابق چیف جسٹس مرکنڈے کاٹجو نے ہندو مذہب سے اختلاف کا اظہار کرتے ہوئے اعتراض اٹھایا ہے کہ کوئی گائے کسی کی ماتا (ماں) نہیں ہوسکتی۔سابق بھارتی چیف جسٹس مرکنڈے کاٹجو نے ایک پروگرام میں شرکت کے دوران کہا کہذرا سوچیے کہ کوئی جانور کسی انسان کی ماتا کیسے ہوسکتی ہے، کیا آپ کے پاس دماغ ہے، یا گوبر بھرا ہوا ہے؟انہوں نے کہا کہ پوری دنیا میں لوگ بیف (گائے کا گوشت) کھاتے ہیں،

میں نے خود بھی کیرالہ میں بیف کھایا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ بھارت میں آج بھی نچلی ذات کے افراد سے تعصب برتا جارہا ہے اور پڑھے لکھے لوگ بھی اِس برائی میں مبتلا ہیں۔





Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *