اڈوانی ہمارے لیڈر، سرپرست ہیں: راج ناتھ

Image caption

مودی کو بی جے پی کی طرف سے وزیر اعظم کے عہدہ کا امیدوار بنائے جانے کے بعد سے پارٹی کے کئی لیڈر اڈوانی کو منانے میں لگے ہوئے ہیں

بھارتیہ جنتا پارٹی کے صدر راج ناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ پارٹی کے سینئر لیڈر لال کرشن اڈوانی سے کوئی اختلافات نہیں ہیں اور وہ اب بھی ان کے سرپرست ہیں۔

راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ اڈوانی بی جے پی میں تنہا نہیں ہوئے ہیں اور انہوں نے کبھی نہیں کہا ہے کہ مودی کو وزیر اعظم کے عہدہ کا امیدوار نہیں بنایا جانا چاہئے۔

جمعہ کو گجرات کے وزیر اعلیٰ نریندر مودی کو بی جے پی کی طرف سے وزیر اعظم کے عہدہ کا امیدوار بنائے جانے کے بعد سے پارٹی کے کئی لیڈر اڈوانی کو منانے میں لگے ہوئے ہیں۔

اڈوانی شروع سے ہی وزیر اعظم کے عہدے کے لیے مودی کی امیدواری کے بارے میں اپنے تحفظات کا اظہار کرتے رہے ہیں۔

سنیچر کو بی جے پی کے صدر نے کہا کہ وزیر اعظم کے عہدے کے امیدوار کے طور پر نامزدگی کے بعد مودی نے براہ راست اڈوانی کے گھر جا کر ان سے ملاقات کی۔

مودی کی امیدواری کا فیصلہ کرنے کے لیے جمعہ کو بلائی گئی بی جے پی کے پارلیمانی بورڈ کی میٹنگ میں بھی اڈوانی نہیں گئے اور انہوں نے ایک خط لکھ کر پارٹی صدر راج ناتھ سنگھ کے کام کرنے کے طور طریقوں پر سوال اٹھائے۔

جب راج ناتھ سنگھ سے پوچھا گیا کہ کام کرنے کے ایسے کون سے طریقے ہیں جن پر اڈوانی کی ناراضگی ہے، تو انہوں نے کہا، ’اس بارے میں مجھے معلومات نہیں ہے۔‘

اڈوانی کو اپنا سرپرست قرار دیتے ہوئے راج ناتھ سنگھ نے کہا ’ہمارا لیڈر، ہمارا سرپرست جو بھی ہم کو کہے گا، میں اس کو سنوگا اور اگر کہیں پر کوئی کمی ہوگی تو بہتر کرنے کی کوشش کروں گا۔‘

راج ناتھ سنگھ نے نریندر مودی کو ایک بار پھر ملک کے سب سے مقبول رہنما قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس بات میں کبھی شبہ نہیں تھا کہ انہیں وزیر اعظم کے عہدہ کا امیدوار بنایا جائے گا۔

Image caption

کانگریس سمیت کئی پارٹیوں نے بی جے پی پر مودی کو آر ایس کے دباؤ میں وزیر اعظم کے عہدہ کا امیدوار بنانے کا الزام لگایا ہے

جب ان سے پوچھا گیا کہ بھوپال میں ہونے والے پارٹی کے پروگرام میں کیا نریندر مودی اور لال کرشن اڈوانی ایک ساتھ ہوں گے، بی جے پی صدر نے کہا ’ہاں سب لوگ جائیں گے۔‘

کانگریس سمیت کئی پارٹیوں نے بی جے پی پر مودی کو آر ایس کے دباؤ میں وزیر اعظم کے عہدہ کا امیدوار بنانے کا الزام لگایا ہے۔ لیکن راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ بی جے پی پر آر ایس ایس کی طرف سے کوئی دباؤ نہیں ہے۔

ممبئی میں صحافیوں کے سوالوں کے جواب میں راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ انتخابات سے پہلے اور انتخابات کے بعد کے اتحادی چنے جائیں گے لیکن اس کے بارے میں کوئی بھی فیصلہ این ڈی اے اتحاد کے موجودہ ساتھیوں کو اعتماد میں لے کر ہی کیا جائے گا۔

انہوں نے عام انتخابات کے لئے بی جے پی کی انتخابی مہم کمیٹی کی کمان کسی اور شخص کو سونپے جانے کے سوال پر کہا کہ اس بارے میں ابھی کوئی بات چیت نہیں ہوئی ہے۔ ابھی نریندر مودی اس عہدے پر ہیں۔


Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*