آج کا پیغام ،خواتین کے نام


یہ پوسٹ خاص طور پر ان نادان یا بیوقوف لڑکیوں کو خبردار کرنے کیلئے کی جا رہی ہے،جو بعض اوقات اپنے گھریلو حالات سے پریشان ہوتی ہیں اور جو بھی پیار سے بات کرے اسی کو ہمدرد سمجھ کر اعتبار کر لیتی ہیںاور اپنی نادانی میں غلیظ مردوں کی ہوس کا شکار بن جاتی ہیںعام زندگی کے علاوہ یہاں نیٹ پر بھی کئی بد کردار آوارہ اور عیاش فطرت لوگ صرف لڑکیاں پھنسانے اور انکی معصومیت سے فائدہ اٹھانے کیلئے آتے ہیںان کا ایک خاص طریقہ کار ہوتا ہےجس پر عمل کرکے وہ لڑکی کو با آسانی شیشے میں اتار

لیتے ہیں کبھی مذھب کا لبادہ اوڑھ کر خود کو پارسا ثابت کرنے کی کوشش کی جاتی ہےتو کبھی بہت میٹھا بااخلاق بن کر اعتماد جیتا جاتا ہے پھر ان باکس میسیجز شروع ہو جاتے ہیںفون نمبر مانگا جاتا ہے پھر تصاویر مانگی جاتی ہیں اور لڑکی کو یقین دلانے کیلئے الله اور رسول(صلی اللہ علیہ وسلم)کی جھوٹی قسمیں تک کھائی جاتی ہیں کہ صرف میں ہی دیکھوں گا اور کسی کو نہیں دکھاؤں گااب جو لڑکی بیوقوف ہوتی ہے یا اپنے حالات کی ستائی ہوتی ہے وہ ان باتوں میں آ جاتی ہےاور ان بےغیرتوں کو ہمدرد سمجھ کر اپنے حالات شئیر کر لیتی ہے اور اعتبار کرکے اپنی تباہی کا سامان کر لیتی ہےاور پھر جب وہ لڑکی مکمل طور پر ان کے بس میں آ جاتی ہے تو ملاقات پر اصرار کیا جاتا ہےملنے سے انکار پر لڑکی کے گھر والوں کو بتانے کی دھمکیاں دے کر اس لڑکی کو باہر بلا کر اس کی عزت کا جنازہ نکال دیا جاتا ہےاور اس کی بھی ویڈیو اور تصاویر بنا لی جاتی ہیں جن کو مستقبل کی بلیک میلنگ کیلئے استعمال کیا جاتا ہے یعنی ایک شریف لڑکی کو جسم فروشی کی اس دلدل میں دھکیل دیا جاتا ہےجس سے وہ چاہ کر بھی نہیں نکل سکتی لڑکی صرف اس ڈر کی وجہ سے کہ کہیں گھر والوں کو پتا نہ چل جائے،بس تڑپتی ہے اور اپنی قسمت کو کوستی ہے کہ کس لمحے اس سے یہ غلطی ہوئی اور ہر لمحے موت کی دعا مانگتی ہے لہٰذا میری بہنوں نیٹ پر کسی شخص کا اعتبار نہ کریں جو آپ سے محبت کے نام پر گفتگو کرتا ہو یا مذھب کا سہارا لے کر آپ کے قریب ہونے کی کوشش کر رہا ہویہ بھی ممکن ہے وہ آپ کے ساتھ اور بہت سی لڑکیوں کو بیوقوف بنا رہا ہو اسلئے خود بھی بچیں اور اپنی دوستوں کو بھی بچائیںبراہ مہربانی نیٹ پر لڑکوں سے رشتے داریاں نہ بنائیں نہ ہی ان کو اپنے فوٹو وغیرہ دکھائیںضرورت کیا ہے آخر خود کو نمائش کیلئے پیش کرنے کی ؟کیا آپ کو ہونے والے ان نقصانات کا اندازہ ہے جو کل آپ کی آنے والی زندگی تک تباہ کر سکتے ہیں ؟اپنی تصاویر اپنی فیملی کے لئے رکھیں۔نیٹ پر ان تصاویرکا بنا اجازت کاپی کرکے غلط استعمال بھی ہو سکتا ہے اور آپ کو خبر تک نہیں ہوتی اور یہ چیز آپ کے لئے نقصان کا باعث بھی بن سکتی ہےایسے کئی واقعات سامنے آئے ہیں جہاں لڑکیوں کی تصاویر یا وڈیو بنائی گئی اور پھر انھیں بلیک میل کرکے غلط کام کرنے پر مجبور کیا گیا،جس کے نتیجے میں کئی لڑکیوں نےخودکشی کرلی میری بہنو فرض کریں کہ اگر آپ ایسی ہی ایک لڑکی ہوجو ایسے کسی بےغیرت انسان کے ہتھے چڑھ گئی ہوں اور گھر والوں کے ڈر سے کسی کو بتا بھی نہیں سکتی کہ کیسے ان لوگوں یا حالات سے چھٹکارا پایا جائے تو میری بہنو ایک غلطی تو آپ سے ہوچکی جیسے بھی ہوئی مگر اب اس ڈر سے کہ گھر والے کیا کہیں گے آپ خاموش نہ رہیں پلیز اس سے پہلے کہ بہت دیر ہو جائےآپ اپنی امی بہن وغیرہ کو بتا کر ان سے مدد مانگیں ان کا غصہ وقتی ہوگا مگر ہوگا آپ ہی کی بھلائی میں اور آپ کو اس غلاظت سے نکلنے میں مدد دے گا اور آئندہ کیلئے ایک سبق بھی باقی معاف کرنے والی ذات الله پاک کی ہے وہ بہت مہربان اور معاف کرنے والا ہے۔اب آخر میں آوارہ اوباش لڑکوں اور مردوں کے لئے ایک پیغام عورت مقدّس ہے اسکے تقدّس کو اپنے اعمال سے پامال مت کیجئے یاد رکھیں کہ آپ آج جس طرح کسی اور کی بہن بیٹی کو ورغلا رہے ہو اس کے ساتھ زنا کرنا چاھتے ہو کل کو یہی سب آپ کے گھر ریپیٹ ہوگا کیوں کہ دنیا مکافات عمل ہےکسی کی بیٹی کے تن سے چادر ہٹانے سے پہلے سوچنا کہ کل یہی کچھ آپ کی بہن بیٹی کے ساتھ بھی ہو سکتا ہی نہیں بلکہ لازمی ہوگا ، آج اگر آپ کسی کی بچی کی زندگی خراب کرو گے تو کل آپ کی اپنی بیٹی بھی اسی مقام پر کھڑی ہوگی اور آپ کے پاس سوائے سر پیٹنے کے کوئی چارہ نہ ہوگا اگر آپ کیلئے ایک نیک بیوی اور نیک بیٹی کی آرزو ہو تو دوسروں کی مائوں اور بیٹیوں کو بھی عزت دینا سیکھو کیونکہ قرآن پاک میں ہے کہ دوسروں کی ماؤں بہنوں اور بیٹیوں کو بھی عزت دینا سیکھو کیونکہ قران پاک میں ہے ﴿٢٦﴾ سورة النور (ترجمہ) ناپاک عورتیں ناپاک مردوں کے لئے ہیں،اور ناپاک مرد ناپاک عورتوں کے لئے ہیں اور پاکیزہ عورتیں پاکیزہ مردوں کے لئے ہیں اور پاکیزہ مرد پاکیزہ عورتوں کے لئے ہیںالله پاک ہم سب کی ماؤں بہنوں بیٹیوں کو اپنی حفظ و امان میں رکھے
(آمين یا رب العالمین)

موضوعات:





Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *