اقراء – کیا سوتیلی بہن کی نواسی سے نکاح ہوسکتا ہے؟ – Magazine

آپ کے مسائل اور اُن کا حل

سوال:۔ مسئلہ نکاح کی اجازت سے متعلق ہے۔ میرے والد کی دو بیویاں ہیں۔ پہلی بیوی سارہ دوسری زہرہ۔ پہلی بیوی سے ایک بیٹی ہبہ اور دوسری بیوی سے ایک بیٹا سعید یعنی میں۔ ہبہ کی ایک بیٹی سلیمہ ہے جس کی شادی خاندان سے باہر ہوئی ہے۔ سلیمہ کی بھی ایک بیٹی ہے ربیعہ۔ سوال یہ ہے کہ کیا میرا نکاح ربیعہ سے ہو سکتا ہے یا نہیں؟ جو کہ میری سوتیلی بہن کی نواسی ہوئی؟(سعید زید، اسلام آباد )

جواب:۔ آپ اورسوتیلی بہن باپ شریک بھائی بہن ہیں ۔جس طرح سوتیلی بہن سے آپ کا نکاح جائز نہیں ،اسی طرح سوتیلی بہن کی اولاد اوراولاد کی اولاد سے بھی آپ کا نکاح نہیں ہوسکتا،بناء برایں ربیعہ سے آپ کانکاح ناجائزہے۔(الفتاویٰ الھنديۃ (1/ 273)واما الاخوات فالاخت لاب وام والاخت لاب والاخت لام وکذا بنات الاخ والاخت وان سفلن)

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں

مولاناڈاکٹرعبدالرزاق اسکندر سے مزید

اقراء سے مزید

مسائل سے مزید




Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*